Khana Kaba ka ghulaaf

خانہ کعبہ کے غلاف کا حیرت انگیز کرشمہ




دبئی(آن لائن اخبار)خانہ کعبے کے غلاف کو بلند درجہ حرارت ،پھٹنے اور بھاری بوجھ کے امکانات سے بچانے کیلئے مکہ مکرمہ کی ام القرنی یونورسٹی میں ماہرینوں کی ٹیم کعبہ کے غلاف میں آرامڈ فائبر شامل کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ یہ فائبر مصنوعی ریشوں کے دھاگوں میں شامل کیا جائے گا اور یہ مصنوعی ریشے خانہ کعبہ کے غلاگ کو شدید درجہ حرارت اور پھٹنے سے بچاتے ہیں۔ خانہ کعبہ کے نئے غلاف کو ایک نئی ٹیکنالوجی کی مدد سے پہلے سے کئی گنا زیادہ مضبوط بنایا جائے گا اور اس ٹیکنالوجی کا نام نینو ٹیکنالوجی ہیں یہ ٹیکنالوجی مصنوعی ریشم کے دھاگوں میں استعمال کی جائے گی اور اس کے بعد کپڑے کی تیاری کا عمل ہو گا تاکہ یہ مصنوعی ریشم کے دھاگے ماحولیاتی عوامل کا مقابلہ کر سکیں۔ اس ٹیکنالوجی میں جو  کیولر مادہ استعمال ہو رہا ہے اس مادے کو اجسام کو گولیوں سے بچانے کے لیے بھی استعمال کیا جاتا ہے اور گاڑیوں  اور طیاروں کو بنانے کیلئے بھی اس مادے کا استعمال کیا جاتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *