دبئی (آن لائن اردو نیوز) سوئیڈن میں گنجی نرس ماڈل بن گئی

سوئیڈن میں گنجی نرس ماڈل بن گئی




دبئی (آن لائن اردو نیوز) ایک گنجی نرس جس نے برسوں تک وگ کی مدد سے اپنے گنجے ہونے کاراز چھائے رکھا لیکن جب اس گنجی لڑکی نے وگ اتار کر انسٹا گرام پر اپنی تصویریں شیئر کی تو وہ ماڈل بن گئی۔ تفصیلات کے مطابق تھریس ہینسن نامی لڑکی چودہ سال کی عمر میں بال گرنے کی بیماری کا شکار ہو گئی تھی جو کہ ایک لاعلاج بیماری تھی جس کی وجہ سے اس کا گنجہ پن بڑھتا گیا۔ بال گرنے کے دوران تھریس ہینسن نے ہر ممکنہ کوشش کی کہ وہ گرتے بالوں کو روک سکے مگر اسکی ہر کوشش ناکام رہی اور اسے یہ حقیقت ماننی ہی پڑی کہ وہ جلد ہی گنجی ہو جائےگی۔ تھریس ہینسن کی اس بیماری کا سب سے پہلے اس کے گھر والوں کو علم ہوا تاہم لڑکی نے اپنے قریبی دوست کو بھی اس سے آگاہ کیا۔ ذرائع کے مطابق تھریس ہنیسن کا کہنا ہے کہ میں نے اپنے گنجے پن کو راز رکھا اور باقدعدگی کے ساتھ اپنے بال چھپانے کے لیے برسوں تک مصنوعی بالوں کی وگ پہننی۔ اس کی وجہ یہ تھی کہ میرے گنجے ہونے پر مجھے کوئی کچھ کہتا تو میں سنجیدہ ہو جایا کرتی تھی۔ بالآخر اپنی سہیلی کی مدداورمشورے سے تھریس نے اپنے گنج پن کو قبول کرتے ہوئے سر پر بلیڈ پھروایا جس کے بعد وہ چمکتے سر کے ساتھ سڑکوں پر گھومنے لگی جہاں لوگ اسے عجیب سی نگاہوں سے دیکھتے رہے۔تھریس ہینسن نے بتایا کہ میرا اس طرح پہلی بار سڑک پر نکلنا لوگوں کے لیے بہت حیران کن تھا لیکن میں نے منفی سوچ کی بجائے اسے فخریہ انداز سے اپنایا کیوں کہ اس وقت میں اکیلی نہیں تھی بلکہ میرے ساتھ ایک اور لڑکی بھی موجود تھی جو خود بھی اسی بیماری کا شکار تھی اور وہ بھی میری طرح گنجی تھی۔تھریس نے کبھی نہیں سوچا تھا کہ اس کا گج پن یک دم نہ صرف اس کی آمدنی میں بے انتہا اضافہ کردے گا بلکہ اسے مشہور بھی کردے گا۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *