نتائج کا ذمہ دارامریکہ خود ہو گا، اسلامی ممالک نے امریکہ کو کھلے عام دھمکی دےدی

نتائج کا ذمہ دارامریکہ خود ہو گا، اسلامی ممالک نے امریکہ کو کھلے عام دھمکی دےدی




ریاض(آن لائن اردو نیوز) ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبد العزیز نے کہا ہے کہ بیت المقدس سے متعلق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے فیصلے پر سعودی عرب کو گہری تشویش ہے۔ تفصیلات کے مطابق شاہ سلمان نے استنبول میں او آئی سی اجلاس کے دوسرے سیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب فلسطینیوں کے حقوق کے حصول تک فلسطینیوں کی حمایت کرتا رہے گا۔ شاہ سلمان بن عبد العزیز نے مزید کہا کہ سعودی عرب دہشت گردی کے خلاف ہمیشہ اپنی جدوجہد جاری رکھے گا۔شاہ سلمان نے کہا کہ بدعنوانی کے خلاف کارروائیوں میں انصاف کے تقاضوں کو یقینی بنایا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق اس سے پہلے او آئی سی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ترکی کے صدر رجب طیب اردوان نے اسرائیل کو دہشت گرد ریاست قرار دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنا عالمی قوانین کی خلاف ورزی اور اخلاقیات کی اقدار کے منافی ہے جبکہ امریکی فیصلہ انتہا پسندوں کے مفاد میں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ فلسطین کا رقبہ آئے دن کم ہو رہا ہے،اسرائیل ایک دہشتگرد ریاست ہے۔ذرائع کے مطابق فلسطین کے صدر محمود عباس کا اپنے خطاب میں کہنا تھا کہ ہم اپنے ملک میں امن کے سلسلے میں امریکہ کے کسی قسم کےکردار کو قبول نہیں کرتے اور اگر عالمی عالمی قوانین کی خلاف ورزی کی گئی تو دنیا خاموش نہیں رہے گی۔ایران کے صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ مقبوضہ بیت المقدس کے حوالسے سے امریکہ کے فیصلے سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ امریکہ فلسطین میں امن کے حوالے سے ثالث نہیں ہے اور فلسطین کی عوام اپنے حقوق کے حصول پر زور دے رہی ہے۔ ذرائع کے مطابق تمام مسلم ممالک امریکہ کے خلاف متحد ہو گئے ہیں اور انہوں نے کہا کہ اگر امریکہ اپنے موقف پر قائم رہا تو نتائج کا خود ذمہ دار ہو گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *