nadeem shaad ghazal

محترم ڈاکٹر ندیم شاد صاحب کا مختصر تعارف اور خوبصورت غزل

تعارف

ڈاکٹر ندیم شاد صاحب کا تعلق انڈیا سے ہے ۔انکی تعلیم ایم اے اردو ہے ۔انہوں نے اپنی شاعری کا سفر 2002 میں شروع کیا ۔جناب ڈاکٹر ندیم شاد صاحب نے 2005میں سبسے پہلے مشاعرے میں شرکت کی ۔آپ تقریباََ ہندوستان کے اکثر سٹیٹ میں ادبی سفر کر چکے ہیں ۔جناب ڈاکٹر ندیم شاد نے ہندوستان کے علاوہ بحرین ،سعودی عرب ،مسقط او رشارجہ کیطرف کئے ادبی سفر کئے ہیں۔

آپکے کلام کو ادبی حلقوں میں ادب کی نگاسے دیکھا جاتا ہے ۔ٓ؂آج کے تازہ کلام میں جناب ڈاکٹر ندیم شاد صاحب کی خوبصورت غزل قارئین کرام کے لئے پیشِ خدمت ہے ۔

غزل

تجھے دنیا سے جو اتنا گلا ہے
بتا دنیا کو تو نے کیا دیا ہے

یہ جو اتنے پے تم اترا رہے ہو
اماں اتنا تو ہم نے کھو دیا ہے

میں بس یہ سوچتا رہتا ہوں آ خر
میرے بارے میں وہ کیا سوچتا ہے

ذرا کوشش نہیں کرتا تو ورنہ
تیری تقریر میں سب کچھ لکھا ہے

مجھے مر کے بھی کب فرصت ملےگی
قضا کے بعد بھی اک سلسلہ ہے

بہت تھوڑا سا پانے کی طلب میں
بہت کچھ تھا جو ہم نے کھو دیا ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *