ٹوٹے دل

      No Comments on ٹوٹے دل
toty dil by usman atis

ٹوٹے دل

ازقلم: عثمان عاطسؔ

اس نفسا نفسی کے دور میں ہربندہ اپنی دُھن میں مگن ہے۔ کوئی پیسے کمانے کے چکروں میں لگا ہواہے، تو کوئی کرسی اور عزت کمانے کے چکروں میں لگا ہوا ہے۔ آج کے دور میں کسی کو دوسرے کی فکرہی نہیں ہے۔ اپنے پرائے ہو رہے دوسری جانب پراروں کو اپنا بنایا جا رہا ہے۔ اپنوں سے دوریاں بڑھ رہیں ہیں۔ ایک دوسرے کے جذبات کے ساتھ کھیلا جا رہا ہے، دل دُکھائے جارہے رہیں۔ مگر حیرت کی بات یہ ہے کہ انسان کو اپنے کیے پر ذرا برابر بھی ملال نہیں ہے کہ میری وجہ سے کسی کا دل ٹوٹا ہے کوئی ناراض ہو گیا ہے۔ پرواہ ہی نہیں ہے۔ لیکن؟؟؟

toty dil by usman atis

قارئین محترم کسی انسان کا دل توڑنا تو بہت آسان ہے لیکن اس ٹوٹے ہوئے دل کو جوڑنا بہت ہی مشکل ہے۔ اسی لیے تو ٹوٹے ہوئے دلوں کو جوڑنے پراللہ تعالیٰ بغیر حساب و کتاب کے جنت میں داخل کرے گے۔ احادیث کی کتابوں میں ایک واقعہ آتا ہے

واقعہ
امی عائشہؓ فرماتی ہیں کہ ایک دن حضورﷺ نے فرمایاعائشہ جو مانگنا ہے مانگ لو۔ میں نےعرض کیا یارسول اللہﷺ اگرآپ اجازت دے تو میں اپنے والد حضرت ابوبکرؓ سے مشورہ نہ کر لو کہ میں کیا مانگو۔ آپﷺ نےاجازت دے دی۔ امی عائشہؓ اپنے والد حضرت ابوبکرؓ کے پاس گئیں اور فرمایا کہ ابا جان حضورﷺ نے فرمایا ہے جو مانگنا ہے مانگ لو اتنا سنہری موقع ہاتھ آیا ہیں۔ میں حضورﷺ سے اجازت لے کر آپ کے پاس آئی ہوں۔ میں چاہتی ہوں کہ کوئی خاص چیزمانگو۔ آپ مجھے مشورہ دے کہ میں حضورﷺ سے کیا مانگو۔ تو حضرت ابوبکر صدیقؓ نے فرمایا بیٹا حضورﷺ سے جا کر کہنا کہ معراج کے وقت خلوتِ خاص میں اللہ تعالیٰ نے آپ سے جو راز کی باتیں کی ہیں ان میں کوئی ایک خاص بات بتا دیں۔

اور عائشہ مجھ سے وعدہ کرو کہ اللہ کے نبی نے جو بھی بات تمہیں بتائی تم مجھے بھی بتاؤ گی۔ امی عائشہؓ واپس تشریف لائیں۔ حضورﷺ نے پوچھا کہ عائشہؓ مشورہ کر آئی ہو۔ امی عائشہؓ نے کہا جی ہو گیا۔ حضور ﷺ نے فرمایا پھرمانگو کیا مانگنا ہے۔ امی عائشہؓ نے فرمایا کہ حضورﷺ اللہ تعالیٰ نے معراج کے موقعہ پرجو آپ سے جو راز کی باتیں کی ہیں ان میں سے کوئی ایک بات مجھے بتا دیں۔ حضور ﷺ حضرت عائشہؓ کی بات سن کر مسکرائے۔ اچھا عائشہؓ سنو راز کی باتوں میں سے ایک بات یہ ہے کہ اللہ تعالیٰ نے فرمایا محبوب تیری امت میں سےاگر کوئی شخص کسی شخص کا ٹوٹا ہوا دل جوڑ دے تو مجھ پر لازم ہے کہ میں اسکو بغیر حساب و کتاب کے جنت میں داخل کرو۔

امی عائشہؓ حضورﷺ کی یہ بات سب کر بہت خوش ہوئیں۔ پھروالد صاحب کے پاس واپس آئیں۔اور انہیں یہ بات بتائی تو حضرت ابو بکرؓ رونے لگے۔ امی عائشہؓ نے فرمایا کہ ابا جان بات تو بہت خوشی کی ہے۔ جنت میں داخل ہونے کا سنہری طریقہ ہاتھ میں آگیا ہے اور آ پؓ یہ بات سن کر رو رہے ہیں۔ حضرت ابوبکرؓ نے فرمایاکہ اس بات کا دوسرا رخ بھی دیکھو تصویر کا دوسرا رخ یہ ہے کہ اگر کوئی شخص کسی کا ٹوٹا ہوا دل جوڑے گا تو اسے بغیر حساب و کتاب کے جنت میں داخل کیا جائے اور اگر کوئی کسی کا دل توڑے گا تو جہنم میں ڈالا جائے گا۔

toty dil by usman atis

احبابِ گرامی حضور ﷺ کی یہ فرمان ہمارے لئے کسی راہ ہدایت سے کم نہیں ہے۔ جب کہ حقیقت یہ ہے کہ ہم نے بہت سے لوگوں کے دلوں کو ٹھیس پہنچائی ہے۔ جانتے ہوئے بھی اور نہ جانتے ہوئے بھی۔ لیکن آج سے یہ عزم کیجئےکہ جب تک جسم میں جان ہے، دل دھک دھک کر رہا ہے۔ ہم کسی کا دل نہیں توڑے گے۔ چاہے جو بھی ہو جائے۔اس دعا کے ساتھ اجازت چاہو گا

اللہ تعالیٰ رب العزت ہمیں اپنی زندگی کو حضورﷺ کے بتائے ہوئے اصولوں کے مطابق گزارنے کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *