Shahnaz Muzammil Best Ghazals

      No Comments on Shahnaz Muzammil Best Ghazals
Shahnaz Muzammil Best Ghazals

میں کھو گئی ہوں مگر اب گمان بولے گا
مکیں بغیر یہ خالی مکان بو لے گا

یہ خامشی تو میری ذات کا حوالہ ہے
میں گم ہوں عشق میں میرا گیان بولے گا

تمازتوں سے بچاتا جو ماں ہے ممتا ہے
یقین دلانے کو ہر سائبان بولے گا

سفینہ لانے کو ساحل پہ جاں پہ کھیلا ہوں
ہر ایک ٹوٹا ہوا بادبان بولے گا

زمانے بھر کی سمیٹی ہے تیرگی شب نے
ملے گی جب بھی زباں آسمان بولے گا

جو مری روح مرے جسم و جاں میں بستا ہے
وہ آج تیرے مرے درمیان بولے گا

اگرچہ میرا جنون مجھ کو بے خبر کرے
زمین بولے گی سارا زمان بولے گا

Shahnaz Muzammil Best Poetry In Urdu

Shahnaz Muzammil Best Ghazals

اس پُر آشوب دور میں ایک ماں کی آواز

امن ہے حسن ہے یہ خواب نگر لگتا ہے
الٹی ہو جائے نہ تعبیر یہ ڈر لگتا ہے

شِہر پُر امن کے سارے ہی مقفل ہیں کواڑ
جو نظر آتا ہے وہ ساتواں در لگتا ہے

ذہن کے بند دریچے میں اتر کر آجا
بن ترے سارا نگر آج کھنڈر لگتا ہے

ساتھ بچوں کے کوئی راہ بھی دشوار نہ تھی
اب تو دشوار یہ جیون کا سفر لگتا ہے

راہ پُر خار ہو منزل کا نشاں دھندلا ہو
کرمِک شب بھی مسافر کو خضر لگتا ہے

میرے اللہ یہ دہشت کی فضا چھٹ جائے
ایسے موسم سے پرندوں کو بھی ڈر لگتا ہے

Shahnaz Muzammil Best Ghazals

v

جلا کر اک دیا رکھا ہوا ہے

جلا کر اک دیا رکھا ہوا ہے
کسی طوفان سے سودا ہوا ہے

بہت مدت سے ایک میرا سندیسہ
ہوا کے ہاتھ پر لکھا ہوا ہے

ہمیں اس حال میں پہچان لو گے
یہ مت کہنا کہیں دیکھا ہوا ہے

کبھی فرست ملے تو آ کے ملنا
دفا کا قرض اک رکھا ہوا ہے

ہر اک دستک تمہاری سن رہا ہے
جو اوپر ہے وہ کب سویا ہوا ہے

بھلا ہو تتلیوں کے پیرھن کا
فضا کا رنگ کچھ بدلا ہوا ہے

نئی تعبیر بنتے جا رہے ہو
ادھورا خواب کب پورا ہوا ہے

تمہا رے در پہ کیوں سر کو جھکائیں
کیوں اپنے کو خدا سمجھا ہوا ہے

Shahnaz Muzammil Best

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *