Manzoor-Ul-Haq Ke Aizaz Main Alvidai Program

Manzoor-Ul-Haq Ke Aizaz Main Alvidai Program

سفیرِ پاکستان محترم منظورالحق کے اعزازمیں حلقہ فکروفن کیجانب سے فقید المثال الوادعی تقریب

رپورٹ: ڈاکٹر حناء امبرین

ادب دوست ادب و نواز سفیرِ پاکستان محترم منظور الحق اور انکی فیملی کے اعزاز میں حلقہء فکروفن کی جانب سے ریاض کے بلند و بالا الفیصلیہ ٹاور کے گلوب ریستوران میں فقید المثال الوداعیہ دیا گیا، جس میں اراکین و احبابِ فکروفن نے بهرپور شرکت کی. تقریب کی صدارت صدر حلقہء فکروفن ڈاکٹر محمد ریاض چوہدری نے کی جبکہ تقریب کے مہتمم خاص ناظم الامور حلقہء فکروفن ڈاکٹر طارق عزیز تهے، نظامت کے فرائض سیکرٹری جنرل وقار نسیم وامق نے سرانجام دئیے.

Manzoor-Ul-Haq Ke Aizaz Main Alvidai Program

تقریب کے مہمانانِ خصوصی سفیرِ پاکستان محترم منظور الحق اور ان کی اہلیہ بیگم نگہت منظور تهے جبکہ جدہ سے تشریف لانیوانی معروف پاکستانی نژاد سعودی صحافی، شاعرہ و ناول نگار سمیرہ عزیز اعزازی مہمان تهیں . سفیر پاکستان کی گلوب آمد پر انکا والہانہ استقبال کیا گیا اور انہیں گلدستہ پیش کیا گیا۔

تقریب کا آغاز ڈاکٹر محمود احمد باجوہ نے تلاوتِ قرآن پاک سے کیا اس کے بعد ڈاکٹر سعید وینس نے بارگاہِ رسالت میں ہدیہء نعت پیش کیا، تقریب کے مقررین میں ڈاکٹر طارق عزیز، وقار نسیم وامق، پروفیسر میمونہ ملک، ڈاکٹر حناء امبرین اور سفیر پاکستان محترم منظور الحق تهے۔

Manzoor-Ul-Haq Ke Aizaz Main Alvidai Program

سفیرِ پاکستان نے اپنے خطاب میں کہا کہ حلقہء فکروفن نے ریاض میں ادب کے حوالے سے معیاری تقریبات منعقد کیں انہوں نے مزید کہا کہ یہ انکی خوش قسمتی تھی کہ انہیں اپنے سعودیہ کے قیام کے دوران حلقہء فکر و فن کی تقریبات میں شرکت کا موقع ملتا رہا، انہوں نے مزید کہا کہ دورِ حاضر میں چند عناصر عدم برداشت کا ماحول پیدا کئے ہوئے ہیں ایسے میں ادب نثری اور شاعری دونوں طرح سے محبت بانٹنے میں اپنا کردار ادا کر سکتا ہے۔

محبت وہ جذبہ ہے جس کی حدود و قیود متعین نہیں ہیں اور ادیب و شعراء محبت عام کر کے معاشرے میں خوشگوار فضا قائم کر سکتے ہیں، سفیرِ پاکستان نے کہا کہ ریاض میں انہوں نے بہت کچھ پایا اور اب خوشیاں اور بہت ساری محبتیں اپنے ساتھ سمیٹے ہوۓ واپسی کا وقت آگیا ہے، واقعات کا تواتر اس بات کا ثبوت ہے کہ وقت کا اپنا کوئی وجود نہیں بلکہ یہ ایک ریفرنس ہے، سعودی عرب اور پاکستان دونوں بہت اہم ملک ہیں کیوں کہ تمام پاکستانیوں کا اس ملک کے ساتھ روحانی رشتہ ہے جو کہ انتہائی مضبوط ہے۔

Manzoor-Ul-Haq Ke Aizaz Main Alvidai Program

حلقہء فکروفن کے صدر ڈاکٹر محمد ریاض چودھری نے سفیرِ پاکستان کا شکریہ ادا کرتے ہوۓ کہا کہ جناب منظور الحق محبتوں کے سفیر ہیں جو کہ ایک ادیب ہونے کے ساتھ ساتھ ایک بہترین اور اعلی ناقد بھی ہیں، ان کے ساتھ انہوں نے جدہ سے تشریف لانے والی پاکستانی نژاد سعودی صحافی، شاعرہ، ناول نگار محترمہ سمیرہ عزیز کا بھی شکریہ ادا کیا کہ وہ تقریب میں شامل ہوئیں۔

Manzoor-Ul-Haq Ke Aizaz Main Alvidai Program

انہوں نے شہر کی معروف سماجی شخصیات ڈاکٹر سعید وینس اور خواتین کی نمائندہ تنظیم ہمنوا کی صدر محترمہ بلقیس صفدر اور شہر کی معروف بزنس وومن محترمہ ڈاکٹر ارم عامر شہزاد کو حلقہء فکروفن کی جانب سے سفیرِ پاکستان کے اعزاز میں دئے جانے والے الوداعیہ میں شرکت کرنے پر ان کا Manzoor-Ul-Haq Ke Aizaz Main Alvidai Programشکریہ ادا کیا۔ ڈاکٹر طارق عزیز نے اپنے مخصوص ادبی انداز میں سفیر پاکستان کو بھر پورخراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے سعودی عرب میں حلقہء فکروفن کا ساتھ دیتے ہوئے ادب کی ترویج و ترقی کے لئے جو عملی اقدام اٹھاۓ اور محبت بانٹی اس کی وجہ سے انہیں تادیر یاد رکھا جاۓ گا۔ وقار نسیم

Manzoor-Ul-Haq Ke Aizaz Main Alvidai Programوامق اور ڈاکٹر حناء امبرین نے سفیر پاکستان کو منظوم خراج تحسین بهی پیش کیا۔اس موقع پر حلقہء فکروفن کی جانب سے مہمانِ خصوصی کو کتب کے خصوصی تحائف پیش کئے گئے۔ ارم عامر کیجانب سے بیگم سفیرِ پاکستان نگہت منظور اور انکی صاحبزادی کو خصوصی تحفہ پیش کیے۔ محترمہ میمونہ مرتضی ملک نے حرفِ اختتام ادا کرتے ہوۓ دعاۓ خیر بهی کروائی جبکہ مہمانوں کے اعزاز میں پرتکلف عصرانہ دیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *