Maa Famous Poetry In Urdu By Aleem Tahir

Maa Famous Poetry In Urdu By Aleem Tahir

ماں کے عنوان پر محترم علیم طاہر صاحب کی لاجواب رباعیات قارئین کرام کے لئے پیش خدمت ہے

رشتوں کے اس ہجوم میں ہمدرد ما ں کی ذات
اک ہی نظر میں جانے ہے ہر درد ماں کی ذات
یہ ماں کی ذات ہی تو ہے ہر فرد کی بنیاد
اس واسطے تو مانے ہے ہر فرد ماں کی ذات

ماں کے لیے اولا د ہی ، نایاب ، خز ا نہ
بیٹا ہو کہ بیٹی ہو ، ہے ، بیتا ب ، خز ا نہ
خود کے لیے ماں کچھ بھی نہیں سوچتی کبھی
بچّوں کے لیے دیکھے جو ، ہر خواب، خز ا نہ

Maa Famous Poetry By Aleem Tahir

Maa Famous Poetry In Urdu By Aleem Tahir

ما ں محترم ہے ماں کا کرے احترام سب
ہر کام سے افضل ہے سمجھنا یہ کام سب
زندہ ہے تو کرلو نا ابھی ما ں کی خدمتیں
ما ں کے بنا پچھتا ئیں گے ہاں صبح و شام سب

ما ں جیسا کوئی دنیا میں کردار نہیں ہے
ما ں جیسا کوئی سچّا یہاں پیا ر نہیں ہے
بیتی ہیں کئی صدیاں تو صدیوں کے بعد بھی
ما ں سے کسی کو آج بھی انکار نہیں ہے

موسم سا معتدل ہے ہر اک ما ں کا رویّہ
معصوم سا اک دل ہے ہر اک ماں کا رویّہ
ہم سب پہ کیا اللہ نے کیسی یہ نوازش
پر کیف ہے، جھلمل ہے ہر اک ماں کا رویّہ

اللہ نے تحفہ دیا ما ں کی عظیم ذات
دکھ سہہ کے اف نہیں کرے ایسی رحیم ذات
بچّے کے لیے رہتی ہے ہر لمحہ مضطرب
اللہ نے کرم کیا دے کر کریم ذات

Maa Famous Poetry In Urdu By Aleem Tahir

Maa Famous Poetry In Urdu By Aleem Tahir

ماں کے سوا بے لوث محبّت کہیں نہیں
دنیا میں ڈھونڈیے یہ عنا یت کہیں نہیں
یہ ماں کی ذات ہے یہاں ہم سب کا تحفّظ
قسمت سے ملی ہم کو یہ نعمت کہیں نہیں

یہ ماں ہے جس نے بچّے کو آغوش میں پالا
ہر لمحہ کوششوں سے ہر اک غم سے نکالا
جب تک رہی زندہ، رہی ہم سب کی محافظ
کر کے دعا ہر ایک مصیبت کو بھی ٹالا

Maa Famous Poetry In Urdu By Aleem Tahir

رشتوں کے آسمان کا غیبی ستون ماں
پُر شور زندگانی میں دل کا سکون ماں
ماں کی دعا سے ہو گئیں تاریکیاں فنا
اندر مرے ہے روشنی میرا درون ماں

بے لوث محبّت ہے ِمری ما ں تری ممتا
اک مخملی چاہت ہے ِمری ما ں تری ممتا
ڈھونڈے سے نہیں مل سکا تیرا کوئی بدل
سورج سی صداقت ہے ِمری ماں تری ممتا

Maa Famous Poetry In Urdu

Maa Famous Poetry In Urdu By Aleem Tahir

دل خون سے لکھّے وہ ہے تحریر مری ما ں
سب سے حسین دنیا کی تصو یر مری ما ں
نیندوں میں کھو کے جب بھی میں دیکھوں کوئی بھی خواب
آنکھیں کھلیں تو پا ؤ ں میں تعبیر مر ی ما ں

اے ماں ترے احساس کا کوئی بدل نہیں
اے ماں تری جدائی کا کوئی بھی حل نہیں
رشتے تو بہت بنتے ہیں رشتوں کی کیا ہے بات
اے ماں جہاں میں تیرا تو کوئی بدل نہیں

Maa Famous Poetry

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *