دبئی میں سلیمان جاذبؔ کے شعری مجموعہ’’عشق قلندر کر دیا ہے‘‘ کی شاندار تقریب رونمائی

دبئی میں سلیمان جاذبؔ کے شعری مجموعہ’’عشق قلندر کر دیا ہے‘‘ کی شاندار تقریب رونمائی

رپورٹ: عثمان عاطسؔ

دبئی(رپورٹ عثمان عاطسؔ) متحدہ عرب امارات میں مقیم معروف نوجوان شاعر سلیمان جاذبؔ کے شعری مجموعے ’’ عشق قلندر کر دیا ہے ‘‘ کی تقریب رونمائی کا انعقاد کیا گیا جس میں پاکستان سے معروف شاعر وصی شاہ کے علاوہ ڈپٹی قونصل جنرل آف پاکستان راناثمرجاوید، پریس قونصلر عاشق حسین شیخ اور پاکستان بزنس قونصل کے جنرل سیکریٹری کامران احمد ریاض کے علاوہ کثیر تعداد میں کاروباری ، سیاسی اور سماجی شخصیات نے شرکت کی۔

img_7089

تقریب دوران تقریب معروف شاعر وصی شاہ، ڈپٹی قونصل جنرل پاکستان رانا ثمر جاوید ، معروف شاعر و ادیب ظہور الالسلام جاوید ، شاعر امجد اقبال امجد نے سلیمان جاذبؔ کے شعری مجموعہ ’’ عشق قلندر کر دیا ہے ‘‘ کے بارے میں تفصیلی گفتگو کی اس موقع پر مقامی گلوکار شاہ زر انور اور فراز احمدنے ترنم سے سلیمان جاذبؔ کی غزلیں پیش کیں تفصلات کے مطابق معروف نوجوان شاعر سلیمان جاذب کے شعری مجموعے” عشق قلندر کر دیا ہے” کی تقریب رونمائی کے لئے پاکستان آڈیٹیوریم دبئی میں ایک پر وقار تقریب کا اہتمام کیا گیا۔ اس تقریب میں یو اے ای میں مقیم معروف ادبی ، سماجی ، سیاسی اور کاروباری شخصیات کے علاوہ اردو ادب کا ذوق رکھنے والے خواتین و حضرات کی کثیر تعداد نے شرکت کی

سلیمان جاذبؔ  عشق قلندر کر دیتا ہے

تقریب کا آغاز دونوں ممالک کے قومی ترانوں سے کیا گیا بعد ازاں ڈاکٹراکرم شہزاد نے تلاوت کلام پاک کی سعادت حاصل کی اورمعروف نعت خوان درِ نجف نے سلیمان جاذبؔ کی لکھی نعت رسول مقبولﷺ پیش کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وصی شاہ نے کہنا تھا کہ سلیمان جاذب کو قریب سے جانے گے تو سلیمان جاذبؔ کی روح تک سے آپ کو صوفیانہ رویوں کی خوشبو ضرور آئے گی۔ محبت، خلوص، نیک نیتی، توکل برداشت، سخاوت جیسے اوصاف نہ صرف سلیمان جاذب کے رویے بلکہ اس کی شاعری سے بھی پھوٹتے نظر آئیں گے

img_7138

انہوں نے مزید کہا کہ سلیمان جاذب کی کتاب کے نام ’’ عشق قلندر کر دیا ہے ‘‘نے مجھے اپنے سحر میں جکڑلیا تھا لہٰذا ان اشعار پر ہی بات ہو پائی جن سے تصوف کی خوشبو آتی ہے لیکن جب آپ اس کتاب کو مکمل پڑھیں گے تو آپ کو اندازہ ہو گا کہ ذات کی شناخت کے سفر سے لے کر محبت کی بھول بُھلیوں تک، دھرتی میں اُگنے والی مہکتی سرسوں سے لے کر پردیس میں آنکھوں میں چبھتی ریت تک ،غریب کی مفلسی سے لے کر معاشرے میں وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم تک، کسی بھی حساس اور باعمل شخص کی طرح سلیمان جاذب بھی زندگی کے ہر ہر رویے کو محسوس کرتا ہے اس کو اپنے انداز سے دیکھتا اور اپنے تجربے کی کسوٹی پر جانچنے پرکھنے کی کوشش کرتا ہے

سلیمان جاذبؔ  عشق قلندر کر دیتا ہے

وصی شاہ کا مزید کہنا تھا کہ شاعری کا تیکنیکی معیار مصرعوں کی بُنت، کرافٹ کی کوالٹی ، تو اگر آپ نے سلیمان کی پچھلی کتابوں کا مطالعہ کیا ہو تو یقیناًسلیمان اس میدان میں بھی آگے کی طرف سفر کرتا ہوا نظر آتا ہے اور کسی بھی انسان کو پرکھنے اور اس کی کامیابی کیلئے یہی بہت ہے کہ جس بھی شعبے میں وہ ہے اگر اس کا آج اس کے گزرے ہوئے کل سے بہتر ہے تو سمجھیں وہ کامیاب ہو گیا سلیمان جاذب کے بارے میں گفتگو کے بعد سلیمان جاذب اور حاضرین کے پر زور اسرار پر وصی شاہ نے اپنی شاعری پیش کی اور حاضرین کے دل موہ لئے

سلیمان جاذبؔ  عشق قلندر کر دیتا ہے

قبل ازین گفتگو کرتے ہوئے ڈپٹی قونصل جنرل رانا ثمر جاوید نے کہا کہ سلیمان جاذب ؔ نوجوان نسل کے ترجمان ہیں انہیں دیکھ کر خوشی اوراطمینان ہوتا ہے نئی نسل بھی اردو ادب اور شاعری کے فروغ میں اپنا حصہ بٹارہی ہے بیرون ملک آنے کے بعد کسی بھی زبان کو خطرہ اس کے مٹنے کا ہوتا کیونکہ نئی نسل عموما وہی زبان سمجھنے بولنے اور لکھنے لگتی ہے جو اس ملک میں بولی اور سمجھتی جاتی ہے ایسے میں اگر کوئی اپنی زبان کے فروغ کے لئے کام کرے تو دل کو اطمینان اور طمانیت حاصل ہوتی ہے۔انہوں نے مزید گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سلیمان جاذب نوجوان نسل کے ترجمان ہیں جو بہت ساری امنگ اور تمنائیں لے کر یہاں آتی ہے جس کی پہلی توجہ روزگار کے حصول پرہوتی جس کے بعد وہ اپنی شوق کی تسکین کرتے ہیں

سلیمان جاذبؔ  عشق قلندر کر دیتا ہے

سلیمان جاذبؔ ان خوش نصیبوں میں سے ایک ہیں ہے جسے روزگار کے ساتھ ساتھ اپنے شوق کی تسکین کا موقع بھی ملا اوراس کی صلاحیتوں میں نکھار بھی آیا۔ سلیمان جاذب کا پہلا شعری مجموعہ ’’تیری خوشبو‘‘تھا جسے ادبی دنیا نے بے حد سراہا اس میں محبت،  محبوب اور جوانی کی امنگوں کا تذکرہ تھا’’ عشق قلندر کر دیا ہے ‘‘ سلیمان جاذب کا دوسرا شعری مجموعہ ہے جس میں عشق حقیقی و مجازی کو موضوع بنایا گیا ہے اس کتاب کی سب سے خاص بات یہ ہے کہ اس میں الفاظ کا چناؤ بہت ہی سادہ اور آسان ہے جو پڑھنے والوں کو اپنی جانب متوجہ کرلیتا ہے۔

دبئی میں سلیمان جاذبؔ کے شعری مجموعہ’’عشق قلندر کر دیا ہے‘‘ کی شاندار تقریب رونمائی

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے امجد اقبال امجد کا کہنا تھا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ مختصر عرصہ میں سلمان جاذب نے امارات میں قدم رکھتے ہی اپنی صلاحیتوں سے یہاں کی ادبی کمیونٹی کو اپنا گرویدہ بنا ڈالا آج جبکہ انکی کتاب ” عشق قلندر کر دیا ہے” کی تقریب رونمائی ہے اورمیں سمجھتا ہوں کہ انکی شاعری ان کے نام کی طرح جاذبِ نظر ہے اپنی شاعری میں سادہ باتیں بیان کرتے ہیں الفاظ کی تراش خراش کے ساتھ ساتھ ردیف و قافیوں کو ہم آہنگی سے سمونے کا ہنر ان کو یکتا کرتا ہے۔

سلیمان جاذبؔ  عشق قلندر کر دیتا ہے

اس موقع پر نوجوان شاعر سلیمان جاذبؔ نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میرا شعری مجموعہ عشقِ حقیقی اور عشق مجازی کا متزاج ہے جس میں غزلوں کی ترتیب اس قدر آسان فہم اور سادہ ہے کہ عام لوگ بھی اسے آسانی سے سمجھ سکتے ہیں سلیمان جاذب نے مزید گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شاعری میں اپنایت اسی وقت پیدا ہوتی ہے جب وہ دل کے قریب ہوتی ہے اور میری شاعری میرے احساسات کی ترجمان ہے انہوں نے متحدہ عرب امارات میں مقیم شعراء اور پاکستانی کمیونٹی کی طرف سے ملنے والی عزت اور پذیرائی کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ وہ آئندہ بھی معیاری شاعری اور خوبصورت ادبی تخلیقات اپنے قلم کی زینت بناتے رہیں گے اور اردو ادب کے فروغ کے لئے اپنی ہر ممکن کاوشیں جاری رکھیں گے

تقریب میں نامور فنکارہ و گلوکار سلمیٰ آغا نے اپنے وڈیو پیغام میں سلیمان جاذبؔ کو مبارک باد دی اس موقع پرمعروف موسیقار شاہ زر انور اور فراز احمد نے ترنم میں سلیمان جاذب کی غزلیں پیش کیں جنہیں حاضرین نے بہت پسند کیا تقریب سے اختتام سے قبل کتاب کے ٹائیٹل کی رونمائی کی گئی اور منتظمین کی طرف سے مسٹر ایکسپرٹ کے ایم ڈی کامران ریاض ، قرۃ العین ، چیئرمین لاکازا گروپ جمیل اسحاق ، ایس ایم خان ، جی ایم شہزاد ، شبیر مرچنٹ ، مخدوم رئیس قریشی ، عرفان اکرم ، میاں عمر براہیم ،اور معروف گلوکارہ صومیہ خان کو اعزازی شیلڈز دی گئیں

سلیمان جاذبؔ  عشق قلندر کر دیتا ہے

تقریب میں ویلفیر قونصلر صولت ثاقب، مسز ثمینہ ناصر، عرفان افسر اعوان، چوہدری راشد علی بریار، ڈاکٹر اکرم چوہدری، سید شرافت علی شاہ، ڈاکٹر محبوب خان، معروف افسانہ نگار حافظ سہیل انجم ، ڈاکٹر رحمینہ، عامر تقی، مسز شیریں درانی و دیگر خواتین و حضرات نے شرکت کی۔ کمپرنگ کے فرائض حافظ زاہد علی نے اپنے منفرد انداز میں بخوبی سرانجام دیئے اور رونمائی تقریب کے منتظمین میں رباب سحر، ملک وحید بابر، سنیل جاوید، شبیر حسین، عابد اختر قریشی و دیگر شامل تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *