December Sad Poetry In Urdu | December Poetry

      No Comments on December Sad Poetry In Urdu | December Poetry
December Sad Poetry In Urdu

December Sad Poetry

دسمبر چل پڑا گهر سے

دسمبر چل پڑا گهر سے
سنا ہے پہنچنے کو ہے
مگر اس بار کچھ یوں ہے
کہ میں ملنا نہیں چاہتی
ستمگر سے
میرا مطلب– دسمبر سے
کبهی آزردہ کرتا تها
مجهے جاتا دسمبر بهی
مگر اب کے برس ہمدم
بہت ہی خوف آتا ہے
مجهے آتے دسمبر سے
دسمبر جو کبهی مجهکو
بہت محبوب لگتا تها
وہی سفاک لگتا ہے
بہت بیباک لگتا ہے
ہاں اس سنگدل مہینے سے
مجهے اب کے نہیں ملنا
قسم اسکی… نہیں ملنا
مگر سنتی ہوں یہ بهی میں
کہ اس ظالم مہینے کو
کوئی بهی روک نہ پایا
نہ آنے سے، نہ جانے سے
صدائیں یہ نہیں سنتا
وفائیں یہ نہیں کرتا
یہ کرتا ہے فقط اتنا
سزائیں سونپ جاتا ہے
اروی سجل

 December Poetry

December Sad Poetry In Urdu

دسمبر اب نہیں آنا

زمانہ وہ محبت  کا
تھا وہ بس پیار کا موسم
کبھی لکھا تھا قدرت نے
مجھے بھی چھو کے دیکھا تھا
بڑی انمول چاہت نے
تمہارے سرد ہاتھوں کا
مرے گالوں کو چھو لینا
مجھے پھر  چھیڑ کر کہنا
“تو میری جان ہے …. جاناں”
زمانہ وہ محبت کا
جو اب ماضی کا حصہ ہے
گئے موسم  کا قصہ ہے
بہت ہی یاد آتا ہے
دسمبر کے فضاؤں میں
ہوا کے سرد جھونکے کا
میں جب بھی لمس پاتی ہوں
مجھے گزرے دسمبر کی
وہ راتیں یاد آتی ہیں
نگاہیں شوق میں اتری
وہ باتیں یاد آتی ہیں
تمہارے سرد ہاتھوں  کی
شرارت  یاد آتی ہے
تمہارے ہونٹ پہ ٹھہری
محبت یاد آتی ہے
میں اب یہ سوچتی ہوں کہ
یہ موسم کیوں بدلتے ہیں
کہ جن میں خواب جلتے ہیں
یہ آنکھیں  کیوں پگھلتی ہیں
نئے کچھ  زخم دینے کو
دسمبر جب بھی آتا ہے
مجھے کیوں توڑ جاتا ہے
دسمبر اب نہیں  آنا
دسمبر اب نہیں  آنا

زارا فراز

ناک  میں  ہوگا   دم   دسمبر  میں

December Sad Poetry In Urdu

ناک  میں  ہوگا   دم   دسمبر  میں
دیں  گے  عاقل  بھرم  دسمبر  میں

یہ بھی موسم کی  اک  شرارت ہے
ہر  طرف  ہیں   صنم  دسمبر  میں

اب  دوا  کی  نہ دل  کو  حاجت  ہے
درد  بھی  نا    ہو  کم   دسمبر  میں

ایسی  محفل    سجائی   ہے    گویا
آج   پھر   اک   ستم    دسمبر   میں

سال  بھر  جو  چلا  کے  دیکھا  تب
اب  رواں   ہے    قلم    دسمبر  میں
سالک  جونپوری

December Sad Poetry In Urdu

وہ اپنے ساتھ لے گیا شاید
جاگتی سردیاں دسمبر کی
ساجد حمید

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *