Best Urdu Poetry Ke Zair-E-Ihtimaam Shandaar Mushaaira Ka Ineqad

Best Urdu Poetry Ke Zair-E-Ihtimaam Shandaar Mushaaira Ka Ineqad
رپورٹ: ڈاکٹر حناء امبرین

تیئیس دسمبر 2016 کو بیسٹ اردو شاعری کے زیر اہتمام انٹرنیشنل آن لائن غیر طرحی مشاعرے کا انعقاد کیا گیا۔ یہ مشاعرہ پاکستانی وقت کت مطابق شام چھ بجے شروع ہو

اس مشاعرے کی صدارت استاد ِ محترم  جناب مختار تلہری صاحب نے فرمائی۔Best Urdu Poetry
جبکہ مہمانان ِ خصوصی محترمہ ریحانہ روحی اور محترم شہزاد نیئر  تھے۔ مہمانان ِ اعزازی  جناب ڈاکٹر شفاعت فہیم  آف امروھہ ڈاکٹر ساجد شاہ جہان پوری ، جناب سلیمان جاذب ، جناب اظہر فراغ اور راقمہ ڈاکٹر حنا امبرین تھیں۔ نظامت کے فرائض جناب آفتاب ترابی( جو کہ ناظم حلقہء فکروفن جدہ ، سعودی عرب ہیں ) نے انتہائی خوش اسلوبی سے انجام دئے۔
مشاعرہ کا آغاز  جواں سال شاعر شوذیب کاشر صاحب کے حمدیہ اور نعتیہ کلام سے ہوا۔انہوں نے اپنی شعراۓ آفاق  نعت پیش کی جو نعت اکیڈمی سے 2016 میں بہترین نعتوں میں شامل کوئی اور ایوارڈ سے نوازی گئی۔ اس بعد پروگرام کا با قاعدہ آغاز ترابی صاحب نے بحیثیت ناظم اپنا کلام پیش کرتے ہوۓ ہوۓ کیا جس پر انہیں بے شمار داد ملی۔
Best Urdu Poetry
مقام المحترم جناب مختار تلہری صاحب نے تمام شرکاۓ مشاعرہ کو داد و تحسین سے نوازا اور اور نو آموز شعراء کی حوصلہ افزائی بھی کی۔انہوں نے اپنا انتہائئ عمدہ کلام پیش کیا۔ اور آخر میں تمام شرکاء کا شکریہ ادا کیا۔اور ترابی صاحب کی نظامت کو خوب سراہا۔ محترمہ ریحانہ روحی نے ہمیشہ کی طرح اس بار بھی اپنا دل کے تاروں کو چھو لینےوالا کلام پیش کر کے محفل لوٹ لی۔
جو رقص دل سے نہیں پاؤں سے کیا جاۓ
وہ رقص ِ ذات ہے کوئی دھمال تھوڑی ہے
بعد ازاں شہزاد نیر صاحب  نے اپنی خوبصورت کلام سے نوازا اور محفل میں سماں باندھ دیا۔ انہوں نے سب شرکاء کو بہت داد سے بھی نوزا۔انہوں نے توصیف ترنل کو خراج ِ تحسین پیش کرتے ہوۓ کہا کہ جس طرح وہ اپنا سب سے قیمتی سرمایا وقت ادب کی ترویج میں خرچ کر رہے ہیں اس کی مثال کم ملتی ہے اور یہ بات قابلِ ستائش ہے۔
Best Urdu Poetry
شہزاد نیئرصاحب
فقط ایک  قطرہ ء اشک میرا علاج ہے
مجھے مبتلاۓ ملال کر مرے چارہ گر
شفاعت فہیم آف امروھہ
میں  نے  دیکھا  ہے  ڈوبتا  سورج
میری آنکھوں میں وہ سماں ہے ابھی
سلیمان جاذب صاحب
اکیلا   پڑ گیا  ہے جاذب سے حوصلے  والا
کوئی تو آۓ جو دلوں سے کر دے  ڈر منسوخ
suleman-jazib-5
جناب ساجد شاہ جہاں پوری صاحب
غزل  آج  ترنّم  میں  سُنا  دوں  گا  میں
دیکھنا بزم میں کیا دھوم مچا دوں گا میں
اظہر فراغ صاحب
کون  مجھ  کو  مجھ  سے  چراۓ  گا
 مجھ کو جس شخص پر ہے شک تم ہو
unnamed
ڈاکٹر حناءامبرین  نے توصیف ترنل کی اس ادب دوستی کی تعریف کرتے ہوۓ کہا کہ ایسی محفلوں کا انعقاد  لکھاریوں کے لئے تحریک پیدا کرتی ہیں۔ان کے پیش کردہ کلام میں سے ایک شعر یوں ہے
یوں صحن ِ دل میں بہار اتری
نئے نئے   ہیں   گلاب   سارے
توصیف ترنل صاحب جو کہ نا صرف بیسٹ اردو پوئٹری گروپ کے بانی اور روحِ رواں ہیں بلکہ ایک خوش گو شاعر بھی ہیں انہوں نے اپنا کلام بھی پیش کیا اور بہت سی تحسین وصول کی
پھرملے گا مجھے وہ کہیں نہ کہیں
میں جسے دیکھ کر دیکھتا رہ کیا
 Best Urdu Poetry
آخر میں آفتاب ترابی صاحب نے شرکاۓ مشاعرہ کا فرداً فرداً شکریہ ادا کر تے ہوۓاختتام کا اعلان کیا۔ صدر ِ محفل اور مہمانانِ و خصوصی و اعزازی اور شریک شعراء سب نے ترابی صاحب کو ان کی شاندار نظامت پر بے حد  سراہا اور مبارکباد پیش کی۔ان کے کلام کانمونہ حاضر ہے
تم  اسیرِ  بوۓ  زر  ہو  اس  لئے
خاک تم پر پیار کی خوشبو کھلے
جو دیگر شعراء اس محفل میں شامل رہے ان کے نام یوں ہیں ،نعیم حنیف، عبدالرزاق ، ضیا ء الرحمن ضیاء ، زین حفیظ، عظمی شہزادی، سلیم صدیقی ، عمران کمال، حسنین عباس جوادی ، سرفراز احمد تھے۔ وہ شعراء جو پروگرام میں شامل  نہ ہو پاۓ انہوں نے اچھے سامعین کا کردار ادا کرتے ہوئے سب کے کلام کو سراہا اور ماحول انتہائی خوشگوار بناۓ رکھا۔
Best Urdu Poetryتوصیف ترنل صاحب کی اس کامیاب کاوش کو نا سراہنا نہ صرف ان کے ساتھ بلکہ تمام دنیاۓ ادب کے ساتھ زیادتی ہوگی۔انہوں ایک انتہائی اعلی معیار کا گروپ بنا کر اس کے معیار کو برقرار رکھا ہوا ہے۔ یہ ان کی ادب نوازی کی سب سے بڑی مثال ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *