Ahmad Faraz 2 Line Sad Shayari In Urdu

Ahmad Faraz 2 Line Sad Shayari In Urdu

احمد فرازؔ صاحب کے شعری مجموعے’’اے عشق جنُوں پیشہ‘‘ سے منتخب اشعار

انتخاب: عبداللہ نعیم رسول

مے کدے کے ادب آداب سبھی جانتے ہیں
جام ٹکرائے تو واعظ نے کہا بسم اللہ

تم نے دیکھی ہی نہیں دشتِ وفا کی تصویر
نوکِ ہر خار پہ اک قطرۂ خوں ہے یوں ہے

تم محبت میں کہاں سود و زیاں لے آئے
عشق کا نام خرد ہے نہ جنوں ہے یوں ہے

شاعری تازہ زمانوں کی ہے معمار فرازؔ
یہ بھی اک سلسلۂ کن فیکوں ہے یوں ہے

Ahmad Faraz 2 Line Sad Poetry

Ahmad Faraz 2 Line Sad Shayari In Urdu

عشق آغاز میں ہلکی سی خلش رکھتا ہے
بعد میں سینکڑوں آزار سے لگ جاتے ہیں

ہر طرح کی بے سر و سامانیوں کے باوجود
آج وہ آیا تومجھ کو اپنا گھر اچھا لگا

اب کے بے فصل بھی صحرا گل و گلزار سا ہے
ورنہ یہ ہجر کا موسم ترے آنے کا نہ تھا

اب ترا ہجر مسلسل ہے تو یہ بھید کھلا
غمِ دل سے غمِ دنیا کا فسوں کچھ کم ہے

لب کشا لوگ ہیں ،سرکار کو کیا بولنا ہے
اب لہو بولے گا تلوار کو کیا بولنا ہے

وہی جانے پسِ پردہ جو تماشا گر ہے
کب،کہاں،کون سے کردار کو کیا بولنا ہے

Ahmad Faraz 2 Line Sad Shayari In Urdu

Ahmad Faraz 2 Line Sad Shayari In Urdu

اگرچہ زور ہواؤں نے ڈال رکھا ہے
مگر چراغ نے لو کو سنبھال رکھا ہے

ایسا ظالم ہے کہ گر ذکر میں اُس کے کوئی ظلم
ہم سے رہ جائے تو وہ یاد دلائے خود بھی

یہ مہربان مشیّت بھی ایک ماں کی طرح
میں ضد کروں تو مری بات مان جاتی ہے

جو بھی پیرایۂ اظہار نظر آتا ہے
سامنے تو ہو تو بیکار نظر آتا ہے

Ahmad Faraz 2 Line Sad Shayari

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *