Abid Sial 2 line Shayari

      No Comments on Abid Sial 2 line Shayari
Abid Sial 2 line Shayari

عابدؔ سیال صاحب کے شعری مجموعے’’بے ستوں‘‘ سے منتخب اشعار

انتخاب: عبداللہ نعیم رسول

اک غم کی روشنی سے چمکتا ہوا یہ دل
ذرہ ہے آفتاب کو لیکن کرے پرے

وہ اک خموش پرندہ شجر کے ساتھ رہا
چہکنے والے گئے بادِ سازگار کے ساتھ

ہاتھ پکڑا اک شعاعِ نور کا اور چل پڑا
خواب جیسے ایک شہرِ آسمانی کی طرف

وہ دیکھنا ہے جو اپنی نظر کا قرض نہیں
وہ کاٹنا ہے جو اپنا نہیں ہے بویا ہوا

Abid Sial 2 line Shayari In Urdu

ہے مشورت مجھے وجدان کے اشارے سے
سفر کی سمت نہیں پوچھتا ستارے سے

شام اور مخملیں پڑاؤ ہے
دھوپ اور کھردری زمین کے بعد

میں جستجو کے ہرے پانیوں پہ اڑتا ہوا
خود آملوں گا تجھے میرے انتظار میں رہ

ٹھیک ہے عکس بھی عزیز رہے
آئنے کو عزیز تر رکھنا

رہا نہ اک ذرا تسکین کا یہ پہلو بھی
زمانہ درپئے آزار تھااور اب تُو بھی!

ہر اک تراشا گیا وقت کے بہاؤ میں
تھپیڑے کھا کے مدوّر ہوئے نکیلے بھی

Abid Sial 2 line Shayari

Abid Sial 2 line Shayari

یہ چائے خانے کی میزوں پہ قہقہوں کے شریک
دلوں میں جھانک کے دیکھو تو سب کے سب تنہا

وہ بعدِ فتح ابھی دادِ فتح چاہے گا
ہنوز باقی ہے اک امتحان میرے لئے

کانچ کے تھے مگر اتنے بھی نہیں تھے نازک
میرے چھو لینے سے کچھ ٹوٹ نہ جاتے ترے ہاتھ

گھیر لیتا میں دلیلوں کی فصیلوں میں تجھے
راستے بچ کے نکلنے کے نہ آتے ترے ہاتھ

Abid Sial 2 line

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *