79th Death Anniversary Of Allama Iqbal

adabi report pics

حلقہء فکروفن کے زیراہتمام شاعرمشرق علامہ محمد اقبال کی 79ویں برسی کا انعقاد

(رپورٹ:ڈاکٹر حناءامبرین طارق (ریاض

سعودی عرب، الریاض میں معروف ادبی تنظیم حلقہء فکروفن کے زیر اہتمام شاعر مشرق علامہ محمد اقبال کی 79ویں برسی کے موقے پر تقریب کا انعقاد پاکستان سفارتخانہ الریاض کے چانسری ہال میں منعقد کیا گیا۔ جس میں سیاسی، مذہبی، فلاحی، ادبی تنظیموں کے اکابرین، سفارتخانہ پاکستان کے اعلی افسران کے علاوہ پاکستانی کمیونٹی کے خواتین و حضرات اور صحافیوں کی بڑی تعداد نے بھرپور شرکت کی۔ تقریب کے مہمان خصوصی قائم مقام سفیر پاکستان محمد حسن وزیرتھے۔

جبکہ پاکستان سے آئی ہوئی معروف شاعرہ شہناز مزمل اور بحرین سے آئے ہوئے معروف شاعر اور ماہر اقبالیات شیخ احمد خان اعزازی مہمان تھے۔ تقریب کی صدارت حلقہ ء فکروفن کے صدر ڈاکٹر محمد ریاض چوہدری نے کی۔ تقریب کے ابتدائی کلمات پاکستان سفارتخانہ کے ہیڈ آف چانسری سردار محمد خٹک نے پیش کرتے ہوئے علامہ محمد اقبال کے افکار پر روشنی ڈالی۔ تقریب کا باقاعدہ آغاز تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا۔ تلاوت قرآن پاک کا شرف بشیر بھٹی کو حاصل ہوا جبکہ ہدیہ نعت حلقہء فکروفن کے سیکرٹری اطلاعات ونشریات عابد شمعون چاند نے پیش کی۔

adabi report pics

تقریب کی نظامت کے فرائض حلقہء فکروفن کی ڈپٹی سیکرٹری ڈاکٹر حنا امبرین طارق نے بڑے احسن طریقے سے سرانجام دیتے ہوئے گاہے بہ گاہے اقبال کی شاعری پر روشنی ڈالتی رہی۔ تقریب کے اعزازی مہمان اور ماہر اقبالیات شیخ احمد خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ اقبال کے خودی کے درس نے نوجوانوں کو معاشرے کی تعمیر نو کا عظیم درس دیا ۔ نوجوانوں کو چاہئے کہ وہ آج کے دور میں کامیابی کیلئے اقبال کو ضرور پڑھیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اقبال نے اپنی ان تخلیقات میں یورپ کے نظریہ قومیت کے خلاف شدید ردعمل کا اظہار کیا۔

تقریب کی دوسری اعزازی مہمان پاکستان سے آئی ہوئی “ادب سرائے” کی چیئرپرسن و معروف شاعرہ ڈاکٹر شہناز مزمل نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اقبال کی شاعری اپنے زمانے کے اجتماعی رجحانات و جذبات کا آئینہ ہے۔ عصری میلانات کا اثر انکے ہر دور کی شاعری میں موجود ہے۔ 1914ء کے بعد کا دور ہی درحقیقت اپنی زرخیزی کے اعتبار سے اقبال کی شاعری کا اہم دور ہے۔ شہناز مزمل نے کہا کہ علامہ اقبال ہر دور کے شاعر ہیں۔

انہوں نے اپنی شاعری کے ذریعے قوم کو نئی راہوں سے روشناس کروایا۔ حلقہء فکروفن کے سینئر ممبر چوہدری سجاد نے کہا کہ علامہ اقبال بجا طور پر یہ محسوس کرتے تھے کہ نوجوان ہی واحد طبقہ ہے جو ذوق عمل کی دولت سے مالا مال ہیں اور ان ہی کے ہوتھوں انقلاب برپا ہوسکتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اقبال نے اپنی تمام امیدیں نوجوانوں سے وابستہ کرلی تھیں۔

adabi report pics

تقریب کی صدارت کرتے ہوئے ڈاکٹر محمد ریاض چوہدری نے کہا کہ حلقہء فکروفن الریاض نے اپنے مشاعروں اور ادبی کاروائیوں کی بدولت سعودی عرب میں ایک خاص مقام حاصل کیاہے اور اپنے لئے ایک منفرد پہچان بنائی ہے۔

حلقہء فکروفن نے سامعین کے ذوق کی قدرکرتے ہوئے ہمیشہ اپنےپروگراموں کا ادبی معیارقائم رکھا ہے۔ ڈاکٹرریاض چوہدری نے مزید کہا کہ علامہ اقبال نے اپنی انقلاب انگیز شاعری میں فکروفن کا جو حسین امتزاج پیش کیا ہے اردو ادب کی تاریخ میں ایسی کوئی مثال پیش کرنے سے قاصر ہے۔ علامہ اقبال کا پیغام ہمیں مایوسیوں کی اتھاہ گہرائیوں سے نکال کر ترقی کے منازل پر ہمیشہ گامزن رکھتا رہے گا۔

تقریب کو خوبصورت رنگ دینے کیلئے عائشہ اکبر،عیشہ اور کنزہ نے علامہ اقبال کا کلام پیش کرکےحاضرین سےخوب داد وصول کی۔ تقریب کےمہمان خصوصی قائم مقام سفیر پاکستان محمد حسن وزیر نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں حلقہء فکروفن کے تمام عہدیداران کو خوبصورت تقریب منعقد کرنے پر مبارک باد پیش کرتا ہوں۔ حلقہء فکروفن کے ادبی پروگراموں سے بہت خوش ہوں۔ ادب کیلئے حلقہء فکروفن کی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ قائم مقام سفیرپاکستان محمدحسن وزیرنےکہا کہ علامہ اقبال نےبرصغیر کے مسلمانوں کو اپنی شاعری کے زریعے بیدار کیا اورانہیں آزادی جیسی نعمت سے روشناس کروایا۔

adabi report pics

آج ہم علامہ محمد اقبال کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں کہ انکے خواب کی بدولت ہم آزاد فضاؤں میں گھوم پھر کرزندگی بسر کررہے ہیں۔ قائم مقام سفیر نے مزید کہا کہ ڈاکٹرعلامہ محمد اقبال کی ابتدائی شاعری ہندو، مسلم اتحاد، حب الوطنی اور غلامی سے نفرت کی ترجمان ہے۔ ہماری نوجوان نسل کو اقبال کے افکار سےروشناس کرواناانتہائی ضروری ہے۔ حلقہء فکروفن کے ناظم الامور ڈاکٹر طارق عزیز نے اپنے خوبصورت انداز میں سپاسنامہ ہیش کیا جسے حاضرین نے بے حد سراہا اور انہیں خوب داد دی۔

حلقہء فکروفن کے جنرل سیکرٹری اور معروف ادیب، شاعر و نوجوان صحافی وقار نسیم وامق نے اپنی خوبصورت شاعری کے ذریعے ڈاکٹر علامہ محمد اقبال کو خراج عقیدت پیش کیا۔ تقریب میں دیگر جن مقررین نے اپنے اپنے انداز میں اقبال کو منظوم خراج عقیدت پیش کیا ان میں محمدشعیب شہزاد، شہنازقریشی، محمد صابر قشنگ، ڈاکٹرمحموداحمد باجوہ اورعبدالرزاق تبسم شامل تھے۔ تقریب کے آخر میں حلقہء فکروفن الریاض کی طرف سے اعزازی مہمان شیخ احمد خان اور الریاض میں مقیم پاکستان کے معروف ، نوجوان صحافی ذکاء اللہ محسن کو اعزازی شیلڈ سے نوازا گیا۔

adabi report pics

حلقہء فکروفن کی طرف سے پاکستان سے آئی ہوئی معروف شاعرہ اور” ادب سراۓ” لاہور کی چیئرپرسن، مادربستان لاہور، شہناز مزمل کو لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ سے نوازا گیا۔ ادب سراۓ لاہور کی طرف سے حلقہء فکروفن کی ڈپٹی جنرل سیکرٹری ڈاکٹر حناء امبرین طارق اور سینئر نائب صدر محمد صابر قشنگ کو ادبی خدمات کے اعتراف میں سالانہ ایوارڈ کے طور میڈل دیئے گئے۔ حلقہ فکروفن کی طرف سے شہناز مزمل، شیخ احمد خان، سفارتخانہ پاکستان کے اعلی افسران سمیت تمام آنے والے معزز مہمانوں کا شکریہ ادا کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *