آزادی رائے کے نام پر مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا جا رہا ہے: اسلامی سربراہی کانفرنس سے وزیراعظم عمران خان کا خطاب




ریاض ( وقار نسیم وامق ) مکہ مکرمہ میں اسلامی تعاون تنظیم او آئی سی کے چودھویں سربراہی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ دنیا بھر میں اسلامو فوبیا کے ذریعے مسلمانوں کو تشدد کا شکار بنایا جا رہا ہے مکہ مکرمہ میں او آئی سی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ آزادی رائے کے نام پر مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا جا رہا ہے جو کسی صورت قابل قبول نہیں ہے اسلام امن اور باہمی تعلقات کو فروغ دینے کا درس دیتا ہے اس لئے اسلام کو دہشت گردی سے جوڑنا درست نہیں اسلام امن اور سلامتی کا دین ہے کوئی بھی مذہب معصوم اور بے گناہ لوگوں کا قتل عام کرنے کی اجازت نہیں دیتا مغرب کو چاہئے کہ مسلمانوں کے جذبات اور احساسات کا خیال کرے اور اسلامو فوبیا سے باہر نکلے اسرائیل نے دہشت گردی کے مذموم مقاصد کے لئے نہتے اور معصوم فلسطینیوں کا استعمال کیا فلسطین کا دارالحکومت بیت المقدس ہے اور ہم اسی کو دارالحکومت مانتے ہیں، کشمیری آزادی کے لئے جدوجہد کر رہے ہیں، او آئی سی مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قرارداد کے مطابق حل کروائے، ضرورت اس امر کی بھی ہے کہ اسلامی ممالک کی قیادت مغربی دنیا کو مسلمانوں کے خلاف پروپگنڈے سے باز رکھنے کے لئے قائل کرے۔
اس سے قبل او آئی سی کے اجلاس سے صدارتی خطاب کرتے ہوئے خادم الحرمین الشریفین سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے کہا کہ ہم مسلم دنیا میں استحکام اور امن چاہتے ہیں ہم آج اپنی عوام کے مستقبل کی تعمیر کے لئے اکٹھا ہوئے ہیں تاکہ ہماری آئندہ نسلیں تابناک مستقبل میں داخل ہوسکیں اور بحیثیت مسلمان دنیا بھر میں بلند مقام حاصل کریں ہمیں ملکر تمام درپیش چیلنجز سے نپٹنا ہوگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *