پاکستان ترکی ملائشیا سہ رکنی مذاکرات




ریاض (وقار نسیم وامق) سعودی عرب کے شہر جدہ میں جاری او آئی سی کی وزرائے خارجہ کونسل کے اجلاس کے موقع پر پاکستان ترکی ملائشیا سہ ملکی مذاکرات ہوئے

ان مذاکرات میں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے پاکستان جبکہ ترکی اور ملائشیا ء کے وزرائے خارجہ نے اپنے اپنے ملک کی نمائندگی کی

ان مذاکرات کا مقصد او آئی سی ریفامز ایجنڈے کا جائزہ لینا اور او آئی سی کو مزید فعال بنانے کیلئے اپنا نقظہ ء نظر پیش کرنا تھا

اس سہ ملکی مذاکراتی اجلاس کا انعقاد ترکی کی درخواست پر رکھا گیا

پاکستان ،او آئی سی میں اصلاحات کے حوالے سے ترکی اور دیگر علاقائی ممبران کے تحفظات سے مکمل طور پر آگاہ ہے اور ان کے نقظہ ء نظر کی قدر کرتا ہے

پاکستان کا نقطئہ نظر اس سلسلے میں انتہائی واضح ہے

او آئی سی ،اقوام متحدہ کے بعد دوسری بڑی تنظیم ہے ہم چاہتے ہیں کہ او آئی سی مستعد ،فعال اور قانون پر عملدرآمد کروانے والی تنظیم کے طور پر دنیا بھر میں جانی اور پہچانی جائے مخدوم شاہ محمود قریشی

پاکستان ،متعینہ وقت کیساتھ ،او آئی سی میں حقیقی اصلاحات کا حامی ہے جو پختہ اصول و ضوابط ،شفافیت اور میرٹ کو مدنظر رکھ کر کی جائیں -اس سلسلے میں ہم سیکریٹری جنرل او آئی سی کو پاکستان کی مکمل حمایت کا یقین دلاتے ہیں مخدوم شاہ محمود قریشی

او آئی سی میں مانیٹرنگ کے سسٹم کو فعال بنایا جائے تاکہ کوئ ممبر ملک طے شدہ اصول و ضوابط سے روگردانی نہ کر سکے مخدوم شاہ محمود قریشی

او آئی سی کو صحیح معنوں میں امہ کو درپیش مسائل کے حل کیلئے نمایندہ تنظیم کے طور پر سامنے آنا چاہیے

ترکی اور ملائشیا کے وزرائے خارجہ نے پاکستان کے نکتہ ء نظر کو سراہا

فریقین کا اس حوالے سے مشاورت کا سلسلہ جاری رکھنے پر اتفاق

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *