اسرائیل کی حمایت میں امریکہ اندھا ہو گیا، امریکی سفیر نکی ہیلی کا بیان

اسرائیل کی حمایت میں امریکہ اندھا ہو گیا، امریکی سفیر نکی ہیلی کا بیان




نیویارک(آن لائن اردو نیوز) اقوام متحدہ میں امریکہ کی سفیر نکی ہیلی نے اقوام متحدہ پر الزام لگایا ہے کہ اقوام متحدہ نے فلسطینیوں اور اسرائیلوں کے درمیان امن کے امکانات کو نقصان پہنچایا ہے۔ ذرائع کے مطابق نکی ہیلی نے کہاکہ پوری دنیا کےمراکز میں سے اقوام متحدہ ایک ایسا مرکز ہے جو ہمیشہ سے اسرائیلی دشمنی میں پیش پیش رہا ہے۔ تٖصیلات کے مطابق نکی ہیلی نے یہ باتیں اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل کے ایک ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کی جوکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے امریکی سفارت خانے کو یروشلم منتقل کرنے کے فیصلے کے اعلان کے بعد منعقد کیا گیا تھا۔امریکی سفیرنکی ہیلی نے مزید کہا کہ صدرڈونلڈ ٹرمپ کا فیصلہ اس حقیقت کو تسلیم کرنے کے بالکل الٹ ہےکہ یروشلم اسرائیل کا دارالحکومت ہے۔ امریکی سفیرنکی ہیلی نےاقوامِ متحدہ پرتعصب کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ امریکہ ایک پائیدار امن معاہدے کے حصول کی کوششوں کا پابند رہے گا۔ ہیلی نے مزید کہا کہ اقوامِ متحدہ یا دوسرے ممالک جنکے بارے میں ثبوت درکار نہیں کہ وہ اسرائیل کی سلامتی کی پروا نہیں کرتے، اسرائیل کو ڈرا دھمکا کر یا دبا کر نہ کبھی کسی معاہدے کا پابند بنا سکیں گے اور نہ ایسا ہونا چاہیے۔ ذرائع کے مطابق فلسطین کے ایک نمائندے ریاض منظور نے کہا ہے کہ امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نے جو کیا ہے اس کے بعد امریکہ کبھی بھی امن کا امین نہیں ہو پائے گا۔ اسرائیل کے نمائندے ڈینی ڈینن نےامریکہ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اس نے جو کیا ہے وہ اسرائیل کے لیے، امن کے لیے اور دنیا کے لیے ایک سنگِ میل ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *