امریکا نے ایک بڑے اسلامی ملک کے اہم ترین شہر کو صفحہ ہستی سے مٹا دیا

امریکا نے ایک بڑے اسلامی ملک کے اہم ترین شہر کو صفحہ ہستی سے مٹا دیا




لاہور (آن لائن اردو نیوز) امریکا نے ایک بڑے اسلامی ملک کے اہم ترین شہر کو صفحہ ہستی سے مٹا دیا۔ تفصیلات کے مطابق ذرائع سے معلو ہوا ہے کہ امریکا نے اسلامی ملک شام کے شہر رقہ کو صفحہ ہستی سے مٹا دیا ہے۔ روس نے امریکا پر الزام لگایا ہے کہ امریکہ نے دولتِ اسلامیہ کے خلاف جنگ میں شام کے شہر رقہ پر بڑی طویل بمباری کی اور رقہ شہر کو صفحہ ہستی سے ہی مٹا دیا۔ پچھلے ہفتے سرئین ڈیمو کریٹک فورسز نے رقہ شہر کا کنٹرول سنبھالا اور اتوار کو اس فورس نے کہا کہ ہم نے شام میں ایسا علاقہ دریافت کر لیا ہے جہاں تیل کی پیداوار بڑی کثیر تعداد میں ہے۔ رقہ شہر سے کچھ تصاویر دریافت ہوئی ہے اور ان تصاویروں میں دیکھا جا سکتا ہے کہ رقہ کے زیادہ ترعلاقے کنڈر اور ویرانی میں مبتلا ہو چکے ہیں۔اس علاقے کی تباہی کا موازنہ جرمنی کے ایک شہرڈریزڈن کی تباہی سے کیا جاسکتا ہے جو دوسری جنگِ عظیم میں تباہ ہوا تھا۔ امریکہ کی اتحادی فوجوں نے اس حملے کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ ہم نے پوری کوشش کی ہے کہ کم سے کم شہریوں کو نقصان پہنچے۔ پچھلے سال روس پر بھی حلب میں بمباری کرنے کا الزام لگایا گیا تھا۔ ذرائع سع معلوم ہوا ہے کہ رقہ میں بمباری کی وجہ سے مالی نقصان تو ہوا ہی ہے مگر جانی نقصان بھی بہت زیادہ ہوا ہے۔

شام میں رہنے شہریوں نے بتایا ہے کہ امریکہ نے رقہ پر جو بمباری سے حملہ کیا ہے ہے اس حملے میں 1130 سے 1873 شہری مارے جا چکے ہیں۔ روس کے وزارتی دفاع کے ترجمان کا کہنا ہے کہ رقہ شہر پر امریکی حملہ دوسری جنگ عظیم میں ڈریزڈن کی تباہی یاد دلاتا ہے۔ سریئن ڈیمو کریٹک فورسز نے چار ماہ کی جنگ کے بعد گذشتہ ہفتے اپنی دولتِ اسلامی کے خلاف فتح کا اعلان کیا تھا۔ دولتِ اسلامیہ نے تین سال سے رقہ پر قبضہ کیا ہوا تھا۔ میجرجنرل ایگور کونسشینوف نے کہا ہے کہ ہم نے شدت پسندوں کے لیے مالی مدد کے بڑے ذریعے العمر آئل فیلڈ پر قبضہ حاصل کر لیا ہے۔ اب شام میں شدت پسندوں کے خلاف لڑائی ان کے آخری گڑھ مشرقی صوبے دیرالزور میں جاری ہے۔ روسی فضائی فوج اور ایرانی ملیشیا کی حمایت یافتہ شامی فوج یہاں شدت پسندوں کے خلاف لڑائی میں مصروف ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *